Pain 💔

محبت

‏محبت پاؤں کی ایڑی میں گڑے کانچ کے اس ننھے سے ذرے کی مانند ہے جو دکھائی نہ بھی دے تو بھی اسکی چبھن

نیند چھین
لیتی ہے

زرد پتے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

‏ہوا تھمی تھی ضرور لیکن​
وہ شام جیسے سسک رہی تھی​
کہ زرد پتوں کو آندھیوں نے​
عجیب قصہ سناد دیا تھا​
کہ جس کو سن کر تمام پتے​
سسک رھے تھے، بلک رھے تھے​
جانے کس سانحے کے غم میں​
شجر جڑوں سے اکھڑ چکے تھے​
بہت تلاشا تھا ہم نے تم کو​
ہر اک راستہ​
ہر اک وادی ​
ہر اک پربت​
ہر اک گھاٹی

!!!اک شخص۔۔۔۔

!!!اک شخص۔۔۔۔

‏لپٹا ہوا ہے دل سے کسی راز کی صورت
اک شخص کہ جس کو مِرا ہونا بھی نہیں ہے
وابستہ ہے مجھ سے کہ توُ ہے بھی کہ نہیں ہے
جب میں نہیں تجھ میں، ترا ہونا بھی نہیں ہے
یہ عشق و محبت کی روایت بھی عجب ہے
پایا نہیں جس کو، اُسے کھونا بھی نہیں ہ
ے

” اُسے کہنا “

‏اس سے کہنا!!!ج
مکمل کچھ نہیں ہوتا
ملنا بھی نا مکمل ہےٕ
جدائی بھی ادھوری ہے
یہاں اک موت پوری ہے
اسے کہنا!!!
اداسی جب رگوں میں
خون کی مانند اترتی ہے
بہت نقصان کرتی ہے
اسے کہنا!!!
بساطِ عشق میں جب مات ہوتی ہے
دکھوں کے شہر میں جب رات ہوتی ہے
مکمل بس خدا کی ذات ہوتی ہے

Create your website with WordPress.com
Get started
%d bloggers like this: